امریکی صدر نے عالمی ادارہ صحت کو چین کی کٹھ پتلی قرار دے دیا 30

امریکی صدر نے عالمی ادارہ صحت کو چین کی کٹھ پتلی قرار دے دیا

عالمی ادارہ صحت چین کی کٹھ پتلی ہے، ادارے کی ساری توجہ چین پر ہے تا کہ اسے اچھا دکھایا جا سکے۔ ڈونلڈ ٹرمپ
امریکی صدر نے عالمی ادارہ صحت کو چین کی کٹھ پتلی قرار دے دیا۔ عالمی ادارہ صحت چین کی کٹھ پتلی ہے، ادارے کی ساری توجہ چین پر ہے تا کہ اسے اچھا دکھایا جا سکے۔ تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کو ایک مرتبہ پھر ہدف تنقید بناتے ہوئے اسے چین کی کٹھ پتلی قرار دے دیا ہے۔
برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق پیر کے روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا عالمی ادارہ صحت پر تنقید کرتے ہوئے کہنا تھا کہ صحت کا عالمی ادارہ چین کی ایک ’کٹھ پتلی‘ ہے۔
امریکی صدر نے اس بات کی تصدیق بھی کی ہے کہ وہ امریکہ کی جانب سے ادارے کو دیے جانے والے فنڈز کم یا ختم کرنے پر غور کر رہے ہیں۔
خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر نے عالمی ادارے صحت پر یہ الزام بھی عائد کیا ہے کہ انہوں نے ہمیں بہت غلط مشورے دیے۔
واضح رہے کہ امریکہ ہر سال عالمی ادارہ صحت کو 450 ملین ڈالر کی امداد دیتا ہے جو کہ کسی بھی ملک کی طرف سے عالمی ادارہ صحت کو دی جانے والی سب سے زیادہ امداد ہے۔امریکی صدر کے بیان کے مطابق ان کے ساتھ صحیح سلوک نہیں کیا گیا جس کے تحت عالمی ادارہ صحت کو دی جانے والی امداد کو کم کرنے کا منصوبہ تیار کیا جا رہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں