افغانستان میں بھارتی سفارتخانے کے باہر بڑی تعداد میں لوگ جمع ہو گئے 161

افغانستان میں بھارتی سفارتخانے کے باہر بڑی تعداد میں لوگ جمع ہو گئے

افغان حکومت بھارت سے تعلقات ختم کرے،بھارت میں مسلمانوں کے خلاف ظلم بند نہ ہوا تو سفارتخانے کے سامنے روز احتجاج ہو گا۔ مظاہرین کا مطالبہ
بھارت میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف اب دنیا بھر سے آوازیں بلند ہو رہی ہیں،کئی اسلام ممالک نے مودی سرکار کو خبردار کیا ہے اور اب افغانستان میں بھارت کے خلاف آوازیں اٹھنے لگی ہیں۔بتایا گیا ہے کہ بھارت میں مسلمانوں کے قتل عام کے خلاف کابل میں بڑی تعداد میں لوگوں نے بھارتی سفارتخانے کے سامنے احتجاج کے لیے جمع ہونے کی کوشش کی۔
افغان فورسز نے مظاہرین کو بھارتی سفارتخانے کے سامنے جانے سے روک دیا۔مظاہرین نے مسلمانوں کے قتل کا سلسلہ بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ افغان حکومت بھارت سے تعلقات ختم کرے ۔بھارت میں ظلم بند نہ ہوا تو سفارتخانے کے سامنے روز احتجاج ہو گا۔واضح رہے کہ گذشتہ روز ایرانی سپریم لیڈر نے بھارتی مسلمانوں کے ہندو انتہا پسندوں کے ہاتھوں وحشیانہ اور بہیمانہ قتل کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کو ان انتہاپسندوں کا مقابلہ کرنا ہوگا۔
ایرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق آیت اللہ سید علی خامنہ ای نے اپنے بیان میں کہا کہ بھارتی حکومت کو مسلمانوں کے قتل عام کو روکنے کے سلسلے میں اپنی ذمہ داریوں پر عمل اور انتہا پسند ہندوؤں کا مقابلہ کرنا چاہیے۔ انہوں نے ہندوستانی مسلمانوں کے قتل عام کو روکنے پر زوردیتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی مسلمانوں کے قتل عام سے دنیا بھر کے مسلمانوں کے دل رنجیدہ، زخمی اور مجروح ہوئے ہیں اور بھارتی حکومت کو مسلمانوں کے قتل عام کو روکنے کے سلسلے میں ہندو انتہا پسندوں اور ان سے وابستہ تنظیموں پر پابندی عائد کرنی چاہیے۔
علاوہ ازیں ) انڈونیشیا کے حکام نے دہلی میں جاری مسلم کش فسادات پر بھارت کے خلاف بڑا قدم اٹھاتے ہوئے بھارتی سفیر کودفتر خارجہ طلب کر کے اپنا شدید احتجاج ریکارڈ کرایا تھا۔ انڈونیشیا کے ذرائع ابلاغ کے مطابق انڈویشیا نے بھارت کے شہر دہلی میں ہونے والے فسادات پر جکارتہ میں تعینات بھارتی سفیر کو وزارتِ خارجہ طلب کر کے شدید احتجاج کیا اور مسلمانوں کی جانو و املاک پر حملوں کی تفصیلات طلب کیں۔انڈونیشین وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ امید ہے بھارتی حکومت فسادات پر جلد از جلد قابو پائے گی اور متاثرین کو مکمل انصاف فراہم کرتے ہوئے اٴْن کی ہر قسم کی مدد بھی کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں