پاسپورٹ نیب کی تحویل میں رہے گا، اسلام آباد ہائیکورٹ کا ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم 168

شاہد خاقان عباسی کی ضمانت منظور

ایل این جی کیس میں شاہد خاقان عباسی کی ضمانت منظور
پاسپورٹ نیب کی تحویل میں رہے گا، اسلام آباد ہائیکورٹ کا ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم
سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی ضمانت منظور ہو گئی ۔ تفصیلات کے مطابق اسلا م آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی ضمانت منظور کر لی ہے۔ عدالت نے ضمانت ایل این جی کیس میں منظور کی۔چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ اطہر من اللہ کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے سماعت کی ۔ ضمانت منظور کرتے ہوئے عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرائے جائیں ۔
عدالت نے ریمارکس دیئے کہ شاہد خاقان عباسی کا پاسپورٹ نیب کی تحویل میں رہے گا۔ سابق وزیراعظم و رہنما مسلم لیگ ن کو ایل این جی کیس میں انکوائری کے لئے جیل میں رکھا گیا تھا ۔ تاہم اب عدالت نے ضمانت منظور کر لی ہے۔ واضح رہے اس سےقبل اسلام آباد ہائیکورٹ نے مسلم ن کے رہنما احسن اقبال کی ضمانت منظور کر لی تھی ۔
کیس کی سماعت چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ جسٹس اطہر من اللہ اور جسٹس لبنی پرویز پر مشتمل ڈویژن بینچ نے کی۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ احسن اقبال کا پاسپورٹ نیب کی تحویل میں رہے گا۔احسن اقبال کو ضمانت ایک کروڑ روپے کے مچلکوں کے عوض ملی۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے ریمارکس دئیے کہ آپ کو غیر ضروری گرفتار نہیں کر سکتے۔ نیب راولپنڈ ی نے مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال کو اسپورٹس سٹی کمپلیکس اسکینڈل میں گرفتار کیا تھا۔
احسن اقبال نیب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے روبرو آج پیش ہوئے تھے۔ جہاں پر سوالات کے غیرتسلی بخش جوابات دینے پر نیب ٹیم نے ان کو گرفتار کیا تھا۔ تاہم اب اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم و رہنما مسلم لیگ ن شاہد خاقان عباسی کی ضمانت بھی ایک کروڑ روپے کے مچلکوں کے عوض منظور کر لی ہے۔ تاہم ان کا پاسپورٹ بھی نیب کی تحویل میں رہے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں