حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری منظور کر لی 200

حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری منظور کر لی

پٹرول 2 روپے 61 پیسے، ہائی اسپیڈ ڈیزل 2 روپے 25 پیسے، لائٹ ڈیزل2 روپے8 پیسے فی لیٹر مہنگا کر دیا گیا
حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری منظور کر لی، پٹرول 2 روپے 61 پیسے، ہائی اسپیڈ ڈیزل 2 روپے 25 پیسے، لائٹ ڈیزل2 روپے8 پیسے فی لیٹر مہنگا کر دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق وزارت خزانہ نے یکم جنوری سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی باقاعدہ منظوری دے دی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اوگرا نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سفارش پر مبنی سمری پٹرولیم ڈویژن کو بھجوائی تھی۔
سمری میں پٹرول کی قیمت 2 روپے 61 پیسے اور ہائی اسپیڈ ڈیزل 2 روپے 25 پیسے ، لائٹ ڈیزل 2 روپے 8 پیسے فی لیٹر، مٹی کے تیل کی قیمت 3 روپے 10 پیسے فی لیٹر بڑھانے کی سفارش کی گئی تھی۔ اب پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں وزارت خزانہ کی منظوری کے بعد یکم جنوری 2020ء سے اضافہ ہو جائے گا۔

سمری منظوری کے بعد پٹرول کی نئی قیمت 116 روپے 6 پیسے، ہائی سپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 127 روپے 26 پیسے، لائٹ ڈیزل آئل کی نئی قیمت 84 روپے 51 پیسے جبکہ مٹی کے تیل کی نئی قیمت 99 روپے 45 پیسے فی لٹر ہو جائے گی۔

جہاں پاکستان میں نئے سال کے آغاز میں پٹرولیم مصنوعات مہنگی کر دی گئی ہیں، وہاں دوسری جانب دنیا کے کئی ممالک میں تیل کی قیمتیں جنوری 2020ء کیلئے برقرار رکھی گئی ہیں۔ متحدہ عرب امارات نے بھی یکم جنوری 2020ء سے پٹرول اور ڈیزل کے نرخ مقرر کردیئے۔ جس کے تحت پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں برقرار رکھی گئی ہیں۔ سپر 98 اور خصوصی 95 پٹرول کے نرخ جنوری 2020 میں بھی وہی رہیں گی، جو دسمبر 2019 میں متعین ہیں، سپر 98 پٹرول جنوری کے دوران 2.24 درہم فی لٹر میں مہیا ہوگا۔
ماہ رواں دسمبر میں بھی اس کے نرخ یہی ہیں۔ خصوصی 95 پٹرول 2.12 درہم فی لٹرملے گا۔ دسمبر میں بھی اس کی قیمت یہی ہے۔ ڈیزل کے نرخوں میں جنوری 2020 میں کوئی تبدیلی نہیں ہوگی۔ موجودہ نرخ 2.38 درہم فی لٹر ہیں۔ جنوری میں بھی نرخ یہی رہیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں