مراد سعید سمیت دو وزراء کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھنے کی مخالفت میں کھڑے ہو گئے 206

مراد سعید سمیت دو وزراء کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھنے کی مخالفت میں کھڑے ہو گئے ماضی میں جس کام کو لے کر ن لیگ پر تنقید کی اب وہ کام خود کیسے کریں؟۔ وزراء کی جانب سے اعتراضات کے بعد کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھوانے کے معاملے کو موخر کر دیا گیا۔ رؤف کلاسرا

مراد سعید سمیت دو وزراء کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھنے کی مخالفت میں کھڑے ہو گئے
ماضی میں جس کام کو لے کر ن لیگ پر تنقید کی اب وہ کام خود کیسے کریں؟۔ وزراء کی جانب سے اعتراضات کے بعد کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھوانے کے معاملے کو موخر کر دیا گیا۔ رؤف کلاسرا
معروف صحافی رؤف کلاسرا نے دعویٰ کیا تھا کہ حکومت نے 700ارب روپےقرض کیلئے کراچی ایئرپورٹ گروی رکھوانے کی تیاری کرلی ہے تاہم اب اس کو موخر کر دیا گیا ہے۔اس حوالے معروف صحافی رؤف کلاسرا کا کہنا ہے کہ جب وفاقی کابینہ کے اجلاس میں کراچی ائیرپورٹ کو گروی رکھنے کی سمری پیش کی گئی تو اُنہیں کافی تنقید کا سامنا کرنا پڑا۔
کچھ وزراء کی جانب سے حفیظ شیخ پر تنقید کی گئی۔سب سے زیادہ تنقید وزیر ہوا بازی غلام سرور کی جانب سے کی گئی جنہوں نے کہا کہ ایو ایشن کی وزارت تو میرے پاس ہے پھر یہ سمری وزارت خزانہ کیوں لے کر آ رہی ہے؟۔اگر یہ زمین گروی رکھنی بھی ہو تو اس کی سمری ہماری وزارت سے جانی چاہئیے یا کم از کم اس میں ہمارا کوئی کردار ہونا چاہئیے۔
لیکن مجھے تو اس بات کا علم بھی یہاں آ کر ہوا۔

اس کے علاوہ وفاقی وزیر مراد سعید نے بھی اعتراض اٹھایا کہ ہم ہمیشہ گذشتہ حکومت پر تنقید کرتے تھے مکہ انہوں نے موٹروے اور ریڈیو کی زمین گروی رکھ دی تو اب ہم خود یہ کام کر سکتے ہیں۔مراد سعید سمیت دو تین وزراء کا خیال تھا کہ اس اقدام پر ہمیں بہت زیادہ تنقید کا سامنا کرنا پڑے گا۔رؤف کلاسرا نے مزید کہا کہ اس سمری میں کئی تکنیکی غلطیاں تھیں جس کے بعد فی الحال اس کو موخر کر دیا گیا ہے۔
۔خیال رہے کہ اس سے قبل روٴف کلاسرا نے دعوی ٰ کیا گیا تھا کہ حکومت کراچی ایئر پورٹ کو گروی رکھوا کر 600 سے 700 ارب روپے قرض لینے جار ہی ہے۔ روٴف کلاسرا نے دعویٰ کیا تھا کہ قرض تین بنکوں سے لیا جائے گا۔ جس میں دبئی اسلامیک بنک، الفلاح بنک سمیت میزان بنک شامل ہے۔ان کا کہنا ہے کہ حکومت معیشت کو اچھا تو دیکھا ررہے ہیں۔ تاہم معلوم ہوا ہے کہ حکومت کے پاس ملازمین کو تنخواہیں دینے کے پیسے بھی نہیں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں