آصف علی زرداری کی درخواست ضمانت،اسلام آباد ہائیکورٹ نے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیا سابق صدر بہت سی بیماریوں کا شکار ہیں، طبی بنیادوں پر ضمانت دی جائے،وکیل کا موقف 217

آصف علی زرداری کی درخواست ضمانت،اسلام آباد ہائیکورٹ نے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیا سابق صدر بہت سی بیماریوں کا شکار ہیں، طبی بنیادوں پر ضمانت دی جائے،وکیل کا موقف

آصف علی زرداری کی درخواست ضمانت،اسلام آباد ہائیکورٹ نے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیا
سابق صدر بہت سی بیماریوں کا شکار ہیں، طبی بنیادوں پر ضمانت دی جائے،وکیل کا موقف
اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق صدر آصف علی زرداری کے طبی معائنہ کیلئے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیاہے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں دو رکنی بینچ کی سابق صدر آصف علی زرداری اور فریال تالپور کی درخواست ضمانت پر سماعت کے دوران وکیل فاروق ایچ نائک نے الگ الگ درخواستوں دائر کیں تھیں۔ درخواستوں میں نیب اوروفاقی حکومت کو فریق بنایاگیا ۔
درخواست میں موقف اختیار کیاگیا تھا کہ فراڈ کے الزام میں سابق صدر آصف علی زرداری کو 5ماہ سے جیل میں بند کررکھا ہے آصف علی زرداری کیخلاف کچھ بھی ثابت نہ ہوسکا۔ درخواست میں موقف اختیار کیاگیا ہے کہ آصف علی زرداری بہت سی بیماروں کا شکار ہیں۔24گھنٹوں میں طبی معائنہ کی ضرورت ہے۔وکیل نے استدعا کی تھی کہ بیماری کی سنگینی کی بنا پر آصف علی زرداری کی ضمانت منظور کی جائے۔

جس پر عدالت نے میڈیکل بورڈ تشکیل دےدیا ہے۔جبکہ دوسری درخواست میں موقف اختیار کیاگیا ہے کہ فریال تالپور ایک خصوصی بچی کی ماں ہیں اور بچی کی دیکھ بھال کیلئے فریال تالپور کو ضمانت پر رہائی دی جائے۔جس پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے آصف علی زرداری کی بیماری سے متعلق معائنہ کیلئے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیا ہے۔یادرہے اس سے قبل وزیر داخلہ بھی سابق صدر آصف علی زرداری کو رہا کرنے کی حمایت کر چکے ہیں۔
، بریگیڈئیر ریٹائرڈ اعجاز شاہ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین بھی اسی سلوک کے مستحق ہیں جو نواز شریف کیساتھ کیا گیا۔اعجاز شاہ نے کہا تھا کہ نواز شریف بیماروں کی طرح باہر جاتے تو اتنا شور نہ ہوتا۔ ان کے ہشاش بشاش باہر جانے سے تاثر ملتا ہے کہ کچھ گڑبڑ ہوئی ہے ۔ مریم نواز کو بیرون ملک جانے کی اجازت دی گئی تو مخالفت کروں گا۔ آصف علی زرداری کے ساتھ بھی نواز شریف جیسا سلوک ہونا چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں