فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ رہنما ایم کیو ایم کو دوبارہ سے وزیر قانون کا ہی عہدہ دیا جائے گا، ممکنہ طور پر کل عہدے کا حلف اٹھائیں گے فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ، رہنما ایم کیو ایم کو دوبارہ سے وزیر قانون کا ہی عہدہ دیا جائے گا، ممکنہ طور پر کل عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیر قانون فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نے فروغ نسیم کی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کی منظوری دے دی ہے۔ 192

فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ

فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ
رہنما ایم کیو ایم کو دوبارہ سے وزیر قانون کا ہی عہدہ دیا جائے گا، ممکنہ طور پر کل عہدے کا حلف اٹھائیں گے
فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ، رہنما ایم کیو ایم کو دوبارہ سے وزیر قانون کا ہی عہدہ دیا جائے گا، ممکنہ طور پر کل عہدے کا حلف اٹھائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیر قانون فروغ نسیم کو دوبارہ سے وفاقی کابینہ میں شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم نے فروغ نسیم کی کابینہ میں دوبارہ شمولیت کی منظوری دے دی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ رہنما ایم کیو ایم فروغ نسیم کو دوبارہ سے وزارت قانون کا عہدہ ہی دیا جائے گا۔ فروغ نسیم ممکنہ طور پر کل بروز جمعہ کی صبح کو اپنی وزارت کا دوبارہ سے حلف اٹھا لیں گے۔ واضح رہے کہ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے تیار کی گئی سمری اور جاری کردہ نوٹیفیکیشن میں غلطی کے بعد فروغ نسیم نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

خبریں سامنے آئی تھیں کہ وزیراعظم نے فروغ نسیم پر شدید برہمی کا اظہار کیا تھا اور انہیں عہدہ چھوڑنے کی ہدایت بھی کی تھی۔ تاہم بعد ازاں فروغ نسیم نے ان خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے انہیں ایسا کچھ نہیں کہا۔ انہوں نے اپنی وزارت اس لیے چھوڑی کیوںکہ وہ آرمی چیف کا کیس لڑنا چاہتے تھے اور وفاقی وزیر ہوتے ہوئے ان کیلئے ایسا کرنا ممکن نہیں تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں